نیب اب ٹیکس چوری اور ڈیفالٹ کے معاملات میں مداخلت نہیں کرے گا: چیئرمین نیب

By , in Uncategorized on .

پاکستان میں احتساب کے قومی ادارے نیب کے چیئرمین جسٹس جاوید اقبال نے اعلان کیا ہے کہ ان کا محکمہ ٹیکس سے متعلق تمام مقدمات کو واپس لے رہا ہے اور آئندہ ٹیکس سے متعلق کسی مقدمے کی تحقیق نہیں کرے گا۔

چیئرمین نیب نے اتوار کے روز اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب میں اعلان کیا کہ ٹیکس سے متعلقہ مقدمات کو واپس لینے کے احکامات جاری کر دیئے گئے ہیں۔

انھوں نے مزید کہا کہ اب نیب کا ادارہ ٹیکس سے مقدمات کی تحقیق نہں کرے گا اور اگر کوئی کیس نیب کے نوٹس میں آیا تو اسے بورڈ آف ریونیو کو بھیج دیا جائے گا۔

نیب چیئرمین کی طرف سے یہ اعلان پاکستان کی نمایاں کاروباری شخصیات کی آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے ملاقات کے دو روز بعد سامنے آیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق کاروباری شخصیات نے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کو نیب کے حوالے سے اپنے تحفظات سے آگاہ کیا تھا۔

نیب چیئرمین نے واضح کیا کہ وہ اپنے دور میں ٹیکس سے متعلق بنائے گئے تمام مقدمات کےعلاوہ ماضی میں بنائے گئے مقدمات کو بھی واپس لے رہے ہیں۔ ‘ٹیکس سے متعلق تمام مقدمات خواہ وہ کسی بھی سطح پر ہیں ان کو واپس لینے کے احکامات جاری کر دیئے گئے ہیں۔

Recommended articles